Explainry Tutorials to Expert in IT

کنایہ کی تعریف و اقسام

کنایہ کی تعریف؛

   کنایہ عربی زبان کا لفظ ہے۔اور اسکا معنی اشارہ کرنے کے ہیں۔کنائیہ میں لفظ اپنے مجازی معنوں میں استعمال ہوتا ہے ۔ لیکن اسکے حقیقی معنی کہا  جاتا ہے۔کنایہ علمِ بیان کی ایک اپم قسم ہے۔ Insinuation بھی مراد لیے جاتے ہیں۔ اس کو انگریزی میں

میر  صاحب  زمانہ  نازک  ہے

دونوں ہاتھوں سے تھامیے دستار

اس شعر میں لفظ اپنے مجازی معنوں میں استعمال ہوا ہے۔لیکن حقیقی معنی بھی مراد لیے گئے ہیں۔

کنایہ کی اقسام؛

کنایہ کی مشہور چھ اقسام ہیں؛

ا۔کنایہ قریب     ب۔کنایہ بعید    ج۔تلویح    د۔رمز     ہ۔ایما     و۔تعریض

کنایہ قریب؛

موصوف کی کسی صفت کا یوں اظہار کیا جائے کہ اس مخصوص صفت کی طرف انسان کا دماغ فوراً منتقل ہو جائے اور زیادہ غور و فکر کرنا نہ پڑے یہاں موصوف اور صفت کے درمیان کوئی واسطہ نہ ہو۔مثلاً

ہے  دوش  محمد  کا  مکیں خانہ  زین پر

اس ناز سے رکھتا ہی نہیں پاوں زمین پر

کنایہ بعید؛

وہ کنایہ جو فوراً سمجھ میں نہ آئے بلکہ کچھ غور و فکر کرنا پڑے۔بالعموم صفات بیان کر دی جاتی ہیں۔ لہذااس چیز تک پہنچنا آسان ہوتا ہے۔ جیسے؛

عروجِ آدم خاکی سے انجم سہمے جاتے ہیں

کہ یہ ٹوٹا ہوا تارا  مہہ کامل نہ  بن جائے

تلویح؛

تلویح کے لفظی معنی دور سے اشارہ کرنے کے ہیں۔جس کنائے میں صفت سے موصوف تک پہنچنے میں متعدد واسطوں سے گزرنا پڑے تو اس کنائے کو تلویح کہتے ہیں۔مثال لے طور پر؛

مغز کو باغ میں آنے نہ دی جئے

نہ  حق  خون  پروانے  کا  ہو  گا۔

رمز؛

رمز کے معنی بھی اشارہ کرنا کے ہیں ۔اگر کنائے میں واسطے تو زیادہ یہ ہوں لیکن ان میں پوشیدگی ہو تو اس رمز کہتے ہیں۔مثال ملاحظہ فرمائیں؛

کچھ کرو فکر اس دیوانے کی

دھوم  ہے پھر  بہار  آنے کی

بہار کی آمد کنایہ ہے۔ جنون کی زیادتی سے مراد یہ ہے کہ کچھ لوگوں پر بہار کی وجہ سے جنون میں اضافہ ہوتا ہے۔

ایما؛

ایما کے لفظی معنی بھی اشارہ کرنا کے ہیں۔یہ وہ اشارہ ہے جس میں نہ تو واسطے زیادہ ہوں اور نہ ان میں پوشیدگی ہو مثلاً

سفید ریش سے مراد بوڑھا آدمی ہے۔ یہ کانیہ قریب ہی کا دوسرا نام ہے۔

تعریض؛

تعریض کنایہ کی ایک اہم قسم ہے اس میں اشاروں اور کنایوں میں کسی عیب کاذکر اس طرح کیا جائےکہ موصوف کا ذکر نہ ہو لیکن اس کی صفات کسی دوسرے شخص سے منسوب کر کے اس طرح بیان کی جائیں کہ دماغ مدعا تک پہنچ جائے۔ کنایہ تعریض میں ذکر کسی اور کا ہوتا ہے ۔عام طور پر طنز کے لیے استعمال ہوتا ہے۔جیسے؛

بدنام بھی جھوٹے بھی ہمیں ہیں بے شک

ہم ستم کرتے ہیں اور آپ کرم کرتے ہیں




Copyright © 2016 - 2020 Explainry.com | All Rights Reserved